امارات اور اسرائیل میں ڈیل کا پہلا نتیجہ، اسرائیلی لڑکیاں کس طرح اماراتی لڑکوں کو ورغلا رہی ہیں؟ ویڈیو لیک ہوگئی، دیکھ کر آپ بھی یقین نہیں کریں گے

دُبئی(نیوز ڈیسک ) متحدہ عرب امارات اور اسرائیل کے درمیان چند روز قبل ایک امن معاہدہ طے پایا ہے جس پر کہیں تنقید تو کہیں تعریف ہو رہی ہے۔ اس امن سمجھوتے کے بعد دونون ممالک کے درمیان ٹیلیفونک رابطوں پر عائد پابندی بھی ہٹالی گئی ہے۔ جس کے بعد اسرائیل اور امارات میں مقیم افراد ایک دوسرے سے جتنی دیر چاہیں بات چیت کر سکتے ہیں

۔عرب میڈیا پر ایک ویڈیو وائرل ہوئی ہے جس میں ایک خوبرو اسرائیلی لڑکی اچانک ایک اماراتی لڑکے سے فون پر کال کرتی ہے اور اس گفتگو کے دوران اس سے امارات اسرائیل معاہدے پر رائے بھی لیتی ہے۔ سعودی اخبار المرصد کے مطابق اسرائیل کی خلیجی ریاست میں قائم ورچوئل ایمبیسی نے اپنے سوشل میڈیا فالوورز کو اس وقت حیران پریشان کر دیا ہے جب ایک اسرائیلی لڑکی اور اماراتی لڑکے کے دوران ہونے والی ٹیلیفونک گفتگو کا ویڈیو کلپ شیئر کیا گیا۔سفارت خانے کے مطابق یہ تاریخ میں پہلا موقع تھا جب اسرائیل اور امارات کے باشندے آپس میں فون کال پر بات کر رہے تھے۔ اسرائیلی ایمبیسی نے اپنے آفیشل ٹویٹر پیج میں لکھا ”اسرائیل اور امارات کے درمیان فون لائنز لانچ ہونے کے بعد ہم نے اپنے ایک فالوور کو حیران کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔“ اس ویڈیو میں ایک اسرائیلی حسینہ لورینا دکھائی دیتی ہے جو ایک اماراتی لڑکے کو فون پر بتاتی ہے کہ ہزاروں فالوورز میں سے اس کا انتخاب کیا گیا ہے کہ وہ امارات اور اسرائیل کے درمیان امن سمجھوتے پر اپنی رائے کا اظہار کرے۔جس کے جواب میں اماراتی نوجوان کہتا ہے کہ وہ اس امن سمجھوتے پر بہت خوش ہے کیونکہ اس خطے میں بسنے والوں کے لیے اس کی بہت اہمیت ہے۔ اسرائیلی حسینہ لورینا نے ویڈیو میں بتایا کہ جب میں نے اماراتی لڑکے سے اسرائیل کے بارے میں رائے مانگی تو اس نے کہا کہ اسرائیل ایک ترقی یافتہ اور جدید سہولیات والا ملک ہے، اسی وجہ سے وہ خطے کے تمام ممالک پر حاوی ہے۔ ویڈیو آپ بھی دیکھیں:

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.