دبئی میں لڑکی نے شوہر سے ایسی بات پے طلاق مانگ لی جب عدالت میں مقدمہ گیا تو جج کی ہنسی ہی چھوٹ گئی

این این اہس نیوز! ایک مقامی عدالت میں بہت ہی دلچسپ معاملہ سامنے آیا ہے۔ ایک اماراتی خاتون نے خاوند کی جانب سے 50 درہم کا ایزی لوڈ نہ کرانے پر طلاق کا مطالبہ کردیا ہے۔ خاتون خُلع کا دعویٰ دائر کرنے کی خاطر مقامی عدالت میں پہنچ گئی۔ نوجوان خاتون کا کا کہنا تھا کہ اُس کا خاوند خرچے کے معاملے میں اُسے تنگ کر تا ہے اور بارہا طلب کرنے کے باوجود بھی اُسے ضروریات کی خاطر پیسے نہیں دیتا۔

اُن کے درمیان تازہ ترین جھگڑا اُس وقت ہوا جب اُس نے اپنے خاوند سے فرمائش کی کہ وہ اُسے موبائل میں پچاس درہم کا بیلنس ڈلوا دے تاکہ وہ اپنی سہیلیوں سے بات چیت کر سکے۔ مگر اُس نے ایسا کرنے سے انکار کر دیا اور پھر اُن کے درمیان تلخ کلامی ہو گئی۔ خاتون نے عدالت کو بتایا کہ اُس کا خاوند پچھلے ایک سال سے مالی مشکلات کا شکار ہے، مگر اُس نے اُس سے کبھی کوئی تقاضا نہیں کیا، اور بُرے حالات میں بھی صبر شُکر کر کے گزارہ کرتی رہی۔خاتون کا مزید کہنا تھا کہ اُس کا خاوند اپنی قلیل تنخواہ کے باعث اُس کا خرچہ اُٹھانے کی سکت نہیں رکھتا۔ تاہم جواب میں خاوند کا کہنا تھا کہ وہ اپنی بیوی کو وقتاً فوقتاً خرچہ دیتا رہتا ہے۔ مگر حال ہی میں موبائل میں بیلنس نہ ڈلوانے کی معمولی سی بات پر اُس نے طلاق کا مطالبہ کر ڈالا ہے۔ جس کا کوئی جواز نہیں بنتا۔ اُس کا اپنی بیوی سے علیحدہ ہونے کا کوئی ارادہ نہیں ہے۔

Comments are closed.