ایک انڈین لڑکی کو باپ نے ایک ایسی دھمکی دی جس نے اسے  کروڑوں روپوں کا مالک بنا دی ا

یہ کہانی ہے ہندوستان کی ایک مڈل کلاس سے تعلق رکھنے والی لڑکی کی جس کو باپ نے  گریجویشن کے بعد کہا کہ  تمہارے پاس ایک سال ہے  اس ایک سال میں  مجھےکامیاب ہو کر دکھاؤ ورنہ دوسروں کی طرح میں تمہاری شادی کر دوں گا ۔
بیٹی نے باپ کی بات کو ایک چیلج سمجھ کر صرف 50 ہزار روپے سےکام شروع کیا اور دیکھتے ہی دیکھتے کروڑوں کی مالکہ بن گئی

 تفصیلات کے مطابق  سیپریا صابو نے فائن آرٹس میں گریجویشن کی ہے ۔ اس  کے اپنےخواب تھے وہ ایک خود مختار عورت بننا چاہتی تھی ۔ لیکن جب اس نے اپنی پڑھائی مکمل کی تو اس کی والد کو اس شادی   کی فکر ہوئی ۔ اس نے اپنے والد سے ایک سال کی مہلت مانگی  ۔ باپ نے مہلت تو دیہ لیکن ساتھ میں کہا کہ ایک سال میں کامیاب ہو کر دکھاؤ ورنہ شادی کردوں گا ۔

اس نے 50 ہزار سے اپنا کام شروع کیا ۔ اور ایک ایڈورٹازئنگ ایجنسی بنائی ۔ اس کی ہمت کو دیکھ کر باپ نے اس کا ساتھ دیا ۔ جلد ہی اس کا کام چل نکلا اور 2012 سے شروع ہونے والا کام  2019 تک  50 کروڑ کی مالیت کابن چکا تھا ۔ سیپریا کی کامیابی نے ثابت کر دیا ہے کہ خواب دیکھنے والی آنکھوں کے ساتھ ساتھ اگر محنت کا جوہر ہو تو تقدیر بھی ساتھ دینے سے نہیں کتراتی۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.

//graizoah.com/afu.php?zoneid=3437593