ہیر کے مزار کی چھت میں‌یہ سوراخ کیوں‌ہے

این این ایس نیوز:ہیر رانجھا کی کہانی کا علم شاید ہی کوئی ایسا ہو جس کو نہ ہو .لیکن یہ حقیقت ہے یا ایک فسانہ اس کے بارے میں اختلاف ہے کچھ تو اسے حقیقی داستان عشق سمجھتے ہیں‌تو کچھ کہتے ہیں‌کہ صرف وارث شاہ کی ذہنی تخلیق ہے اس سے بڑھ کر کچھ بھی نہیں‌ہے

پنجاب کے بڑے شہر جھنگ میں‌اس کا مزار موجود ہے جس کے بارے میں‌کہا جاتا ہے کہ یہاں‌ہیر کے ساتھ رانجھا بھی دفن ہے . یہاں‌کے لوگ وارث شاہ کےبارے میں کہتے ہیں‌ کہ اس نے جھوٹ بولا ہے ہیر عام عورت نہیں‌تھی بلکہ اللہ لوک تھی اور ایک ولیا تھی . یہاں‌کے لوگ اس کو مائی ہیر کے نام سے جانتے ہیں‌. اور اس کے مزار پر حاضری دے کر منت بھی مانتے ہیں‌.

اس مزار سے کئی روایات منسوب ہیں۔ اس کی عمارت انتہائی عجیب ہے۔ اگر آپ دیکھیں تو قبر کے عین اوپر تقریباً 12 فٹ قطر کا ایک سوراخ موجود ہے۔ کہا جاتا ہے کہ بارش ہونے کے باوجود اس سوراخ سے بارش کا پانی مزار کے اندر نہیں آتا۔اس کو مائی ہیر کی کرامت مانا جاتا ہے۔ مجاوروں کے مطابق بزرگوں کے مزارات کی چھتوں میں اس طرح کے سوراخ رکھے جاتے ہیں۔ تاہم اس پر بھی مختلف آراء سننے کو ملی ہیں۔

تاہم ماہر تعمیرات کا کہنا ہے کہ جس زمانے میں یہ مزار بنا تب ایسی عمارتوں کی چھت بنائی ہی نہیں جاتی تھی یا پھر اس میں سوراخ رکھا جاتا تھا۔
کہاجاتا ہے کہ یہاں‌ ہیر کے ساتھ رانجھا بھی دفن ہے اور چھت میں سوراخ رکھنے کی وجہ یہ ہے کہ سورج کی روشنی یہاں‌آسکے

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *