بھائی بہن کی دوستی

این این ایس نیوز :لالچکا کوئی بھی مذہب نہیں ہوتا اس کی واضح مثال گزشتہ دنوں پیش آنے والا واقع ہے جس میں ایک بہن نے بھائی کو ورغلا کر پیسے بٹورے اور جب بھائی کو حقیقت پتا چلی تو اس نے خود کو پھند الگا لیا . اشرف نامی لڑکے نے ایک سال قبل بیوی کو طلاق دی تھی . اس دوران اس کی بہن نے ایک اجنبی نمبر سے کال کی اور اپنا نام عینی بتایا اور دوستی کی خواہش ظاہر کی. اشرف بھی اس کی طرف مائل ہوا اور اس کے ساتھ گپ شپ کرنے لگ گیا . اس دوران اشرف نے گھر میں موجود بہن سے کہا کہ اس نے ایک لڑکی پسند کی ہے اس سے شادی کرنا چاہتا ہے

گھر والوں نے زمیندار کے خلاف قتلکا مقدمہ درج کروا دیا۔ تفصیلات کے مطابق تھانہ صدر کے علاقہ چک نظام کے زمیندار مطیع ﷲ کے ڈیرے پر کام کرنے والے ملازم نوجوان اشرف نے مبینہ طور پر پھند الگا کر خودکسی کر لی تھی اور اب زمیندار کے ہاتھوںمبینہ طور پر محنت کش کے قا تل کا ڈراپ سین ہو گیا ہے۔ محنت کش اشرف طلاق یافتہ تھا جبکہ دوسری شادی کرنا چاہتا تھا۔ اشرف کے اہل خانہے زمیندار مطیع اللہ کے خلاف قتلکا مقدمہ درج کروا رکھا ہےجس کی تفتیش پولیس کر رہی تھی۔ پولیس تفتیش میں انکشاف ہوا ہے کہ چند سال قبل اشرف نے اپنی بیوی کو طلاق دے دی تھی اور وہ دوسری شادی کرنا چاہتا تھا جس کے پیش نظر اس کی بہن سنبل نے ایک دن اشرف کو کسی اجنبی نمبر سے فون کیا اور اسے اپنا نام عینی بتا کر دوستی کی خواہش ظاہر کی یہ سلسلہ کئی روز تک جاری رہا اور دونوں دوست بن گئے، جب اشرف نے گھر کے نمبر پر فون کر کے بتایا کہ اسے ایک لڑکی پسند ہے اور وہ اس سے شادی کرنا چاہتا ہے

تو اس کی بہن سنبل نے اس سے لڑکی کا پتہ اور فون نمبر پوچھا، جس پر اشرف نے اسے سب کچھ بتا دیا. چند روز گزرنے کے بعد سنبل نے اس سے پیسوں کا مطالبہ کیا کہ عینی کو پیسوں کی ضرورت ہے تو 35 ہزار روپے بھجوا دو اسی طرح مختلف اوقات میں اشرف نے اپنی بہن کو 80 ہزار روپے بھجوا دئیے ، جب اشرف نے اپنی بہن سنبل سے لڑکی کے بارے پوچھا کہ کب ان کے گھر رشتے کے لئے جاؤ گے تو اس نے کہا کہ وہ اچانک نمبر بند کر کے غائب ہو گئی ہے. شک گزرنے پر جب اشرف نے سارے معاملے کو جاننے کی کوشش کی تو اسے پتہ چلا کے عینی نام کی کوئی لڑکی نہیں بلکہ وہ اس کی بہن سنبل ہے.
پولیس کا کہنا ہے کہ ہم تمام جہتوں‌سے کیس کی تحقیق کر رہے ہیں‌اور ہم نے وہ رسی بھی اپنے قبضے میں لے کر لیبارٹری بھجوا دی ہے تا کہ علم ہو سکے کہ یہ واقعی خقد کشی ہے یا پھر اشرف کا قتلکیا گیا ہے

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *