دو قریبی دوستوں کو 60 سال بعد معلوم ہوا کہ وہ حقیقت میں سگے بھائی ہیں لیکن یہ حقیقت سامنے کیسے آئی وجہ جانیں

این این ایس نیوز! ہوائی سے تعلق رکھنے والے دو قریبی  دوستوں کو60سال بعد  فیملی ڈی این اے میچنگ ویب سائٹ کے ذریعے پتا چلا کہ وہ حقیقت میں سگے بھائی ہے۔

ایلن روبنسن اور والٹر میکفارلین کا تعلق اوآہو، ہوائی سے ہے۔ دونوں کی پہلی ملاقات  چھٹی جماعت میں ہوئی تھی۔ دونوں تب سے ہی بہت قریبی دوست ہیں۔ایلن کو گود لیا گیا تھا اور والٹر کو اپنے باپ کے بارے میں معلوم نہیں تھا۔اسی وجہ سے دونوں نے الگ الگ Ancestry.com پر سائن اپ کیا۔دونوں اس وقت حیران رہ گئے جب معلوم ہوا کہ دونوں ایک ہی ماں سے پیدا ہوئے ہیں۔دونوں نے بتایا کہ انہیں اپنے رشتے دار ہونے کی توقع نہیں تھی لیکن اپنی ماضی کی یادوں کو دیکھتے ہیں تو پتا چلتا ہے کہ  ایسا  ہی  ہے ۔ایلن ،جو والٹر سے 15 ماہ چھوٹا ہے ، نے بتایا کہ والٹر ساری زندگی اس کے بڑے بھائی کی طرح رہا اور زندگی  میں بہت کچھ سکھاتا رہا۔دونوں کا کہنا ہے کہ ایک دوسرے کے بھائی ہونے کا جاننا ان کے لیے کرسمس کا سب سے حسین تحفہ ہے۔ اب ریٹائرمنٹ کے بعد دونوں ایک ساتھ رہیں گےا ورگھومیں پھریں گے

Comments are closed.