عیدالفطر پر گرج چمک کے ساتھ روزدار بارش کا امکان کہاں کہاں بارش ہوگی محکمہ موسمیات کی پورے پاکستان کو وارننگ

⦿ کب ہونا ہے؟10 مئی صبح 9 بجے سے اور 17 مئی رات 9 بجے تک۔⦿ کہاں ہونا ہے؟خیبر پختونخواہ کے تمام علاقوں، آزاد کشمیر، پنجاب، بلوچستان کے زیادہ تر علاقوں اور سندھ۔

⦿ کیا ہونا ہے؟مغربی ہواؤں کے کم از کم دو مزید سلسلے متاثّر کرینگے، جن سے موسمی سرگرمیاں رونما ہونے کے سب سے زیادہ امکانات منگل سے جمعرات کے درمیان اور دوبارہ ہفتہ یا اتوار سے 17 مئی تک ہونگے۔ انکے زیرِ اثر:آندھی اور گرج چمک کیساتھ بارش اور ژالہ باری کا امکان ہے۔

شمالی اور وسطی خیبر پختونخواہ، پنجاب اور شمالی اور مشرقی بلوچستان میں معتدل سے تیز بارش کی توقع ہے۔باالخصوص جنوبی پنجاب، جنوبی خیبر پختونخواہ اور سندھ میں آندھی کے دوران بعض مقامات پر زیادہ سے زیادہ ہواؤں کی رفتار 70 سے 100 کلومیٹر فی گھنٹہ تک پہنچ سکتی ہے۔

⦾ بلوچستان:تفصیلات:
مشرقی علاقوں بشمول ہرنائی، کوہلو، زیارت، ژوب، لورالائی، بارکھان، ڈیرہ بگٹی اور جعفرآباد کے علاقوں میں مزید ژالہ باری کے امکانات کافی زیادہ ہیں۔ پہاڑی مقامات پر اگلے 7 دنوں میں گرج چمک کے کئی طوفان متاثّر کر سکتے ہیں، جن سے ہلکی سے معتدل بارش کا امکان ہے اور بعض مقامات پر بارش کی مقدار 20 ملی میٹر سے تجاوز کر سکتی ہے۔ زیادہ سے زیادہ آندھی کی رفتار 60 سے 80 کلومیٹر فی گھنٹہ جبکہ آسمانی بجلی گرنے کا اندیشہ بھی ہوگا۔

شمال مشرقی پہاڑوں میں دن کے درجہ حرارت معمول سے 3 سے 7 ڈگری سینٹی گریڈ جبکہ مکران کے ساحلی علاقوں بشمول گوادر میں معمول سے 2 سے 4 ڈگری سینٹی گریڈ زیادہ رہنے کی توقع ہے۔ مطلع جزوی طور پر یا زیادہ تر صاف رہیگا۔ مکران ڈویژن بشمول تربت میں اگلے ہفتے کے اختتام پر گرج چمک کیساتھ بارش کا امکان ہے۔

⦾ شمالی اور وسطی پنجاب:
اگلے 7 دنوں میں راولپنڈی، اسلام آباد، اٹک، چکوال، جہلم، منڈی بہاءالدّین، گوجرانوالہ، گجرات، سیالکوٹ، بھکّر، میانوالی، جھنگ، لاہور، شیخوپورہ، اوکاڑہ، قصور، سرگودھا، خوشاب، فیصل آباد، چنیوٹ، ننکانہ صاحب، ٹوبہ ٹیک سنگھ اور ساہیوال کے علاقوں میں چند مقامات پر یا کہیں کہیں گرج چمک کیساتھ بارش اور ژالہ باری کا امکان ہے۔ بلکے گرج چمک کے طوفان بننے کا امکان درج بالا علاقوں میں اگلے 7 دنوں کے دوران روزانہ ہوگا، جو کہ مئی کے اعتبار سے انتہائی حیرت انگیز بات ہے!

ہر دفعہ نہیں، تاہم گرج چمک کے طوفان کے سبب 70 سے 90 کلومیٹر فی گھنٹہ تک کی ہوائیں چل سکتی ہیں، جبکہ آسمانی بجلی گرنے اور ژالہ باری کا خدشہ ہوگا۔ اگلے 7 دنوں میں درج بالا کئی مقامات پر 20 سے 30 ملی میٹر بارش ہو سکتی ہے جبکہ خطّہٰ پوٹھوہار میں کچھ جگہوں پر 40 ملی میٹر سے زائد بارش کا بھی امکان ہے۔

متوقع موسمی سرگرمی کے دن زیادہ سے زیادہ درجہ حرارت معمول سے 5 سے 8 ڈگری سینٹی گریڈ کم رہنے کا امکان ہے۔
زرعی علاقوں میں رواں ہفتے ابر آلودگی اور ہوا میں نمی کا تناسب معمول سے زیادہ رہیگی۔ زیادہ تر اوقات مطلع جزوی طور پر یا زیادہ تر صاف رہیگا جبکہ گرج چمک کے طوفان بننے کا عمل شام یا رات میں متوقع ہے۔

⦾ جنوبی پنجاب:
اگلے 7 دنوں میں راجنپور، ڈی جی خان، مظفّرگڑھ، ملتان، خانیوال، بہاولپور، بہاولنگر، وہاڑی اور پاکپتن کے علاقوں میں چند مقامات پر گرج چمک کیساتھ بارش کا امکان ہے۔ آندھی کے دوران ہواؤں کی رفتار 70 سے 100 کلومیٹر فی گھنٹہ تک پہنچ سکتی ہے، جبکہ ساتھ آسمانی بجلی گرنے اور ژالہ باری کا بھی امکان ہے۔ رحیم یار خان کے علاقوں میں بھی کم از کم ایک گرج چمک کے طوفان کا سلسلہ بعض مقامات پر متاثّر کر سکتا ہے۔ اگلے 7 دنوں میں 5 سے 10 ملی میٹر بارش کا امکان ہے تاہم بعض مقامات پر 20 ملی میٹر سے زائد بارش ہو سکتی ہے۔

متوقع موسمی سرگرمی کے دن زیادہ سے زیادہ درجہ حرارت معمول سے 6 سے 10 ڈگری سینٹی گریڈ کم ہو سکتے ہیں۔ زرعی علاقوں میں رواں ہفتے ابر آلودگی اور ہوا میں نمی کا تناسب معمول سے زیادہ رہیگا۔ زیادہ تر وقت مطلع جوزی طور پر یا زیادہ تر صاف رہنے کی توقع ہے۔

⦾ خیبر پختونخواہ:
اگلے 7 دنوں میں خیبر پختونخواہ کے میدانی اور پہاڑی علاقوں میں ہلکی سے معتدل شدّت کے کئی گرج چمک کے طوفان بن سکتے ہیں جو کہ پشاور، مردان، چارسدہ، ہزارہ، مالاکنڈ، صوابی، ڈی آئی خان، ٹانک، ہنگو، کرک، لکّی مروت اور ہریپور کے علاقوں کو شام اور رات کے اوقات میں متاثّر کر سکتے ہیں۔
گرج چمک کے طوفان بنتے رہنے کے سبب ژالہ باری اور آسمانی بجلی کا خدشہ موجود رہیگا۔ آندھی کے دوران ہواؤں کی رفتار 60 سے 80 کلومیٹر فی گھنٹہ تک پہنچ سکتی ہے۔ تاہم مطلع جزوی طور پر یا زیادہ تر ابر آلود رہیگا جبکہ دن کے درجہ حرارت معمول سے 4 سے 8 ڈگری سینٹی گریڈ زیادہ رہیں گے۔

⦾ آزاد کشمیر اور پہاڑی خیبر پختونخواہ:
باغ، پونچ بشمول راولاکوٹ، کوٹلی اور میرپور کے علاقوں سے شمال میں مظفّرآباد اور وادیِ نیلم تک گرج چمک اور ہواؤں کیساتھ معتدل بارش کا امکان ہے۔
وادیِ سوات، ایبٹ آباد، مانسہرہ اور مظفّر آباد کے علاقوں میں شام یا رات کے وقت دیر موسمِ بہار کے طرز پر بارش کی توقع ہے۔
پہاروں میں گرج چمک کے طوفانوں کی شدّت زیادہ ہونے کے سبب بالاکوٹ اور ایبٹ آباد میں نمایاں مقدار میں بارش کا امکان ہے، جہاں اگلے 7 دنوں میں 50 ملی میٹر سے زائد بارش ہو سکتی ہے۔ تاہم مطلع جزوی طور پر یا زیادہ تر ابر آلود ہونے کی وجہ سے دن کے درجہ حہارارت معمول سے 5 سے 10 ڈگری سینٹی گریڈ کم رہیں گے۔

⦾ سندھ:
آنے والے ہفتہ اور اتوار کے روز شمالی اور وسطی علاقوں بشمول جیکب آباد، لاڑکانہ، شکارپور، قمبر شہدادکوٹ، خیرپور، سکّھر، دادو، نوشہرو فیروز اور نوابشاہ کے علاقوں میں چند ایک مقامات پر گرج چمک کے طوفان متاثّر کر سکتے ہیں۔ ساتھ ژالہ باری، 80 کلومیٹر فی گھنٹہ تک کی آندھی اور گرج چمک کیساتھ بارش بھی ہو سکتی ہے۔
حالانکہ زیادہ تر وقت دھوپ ہوگی، اسکے باوجود سال کے اس وقت کے حساب سے دن کے درجہ حرارت معمول سے 2 سے 4 ڈگری سینٹی گریڈ کم رہیں گے۔
صوبے کے جنوبی حصّوں بشمول کراچی اور حیدرآباد میں البتّہ رواں ہفتے گرج چمک کیساتھ کچھ بارش کے امکانات کو رد نہیں کیا جا سکتا، جس میں کراچی شہر بھی شامل ہے۔ اگلے 2 دنوں میں 2 ملی میٹر تک بارش ہو سکتی ہے۔ جنوبی سندھ کے ضلع جامشورو میں بھی چند ایک مقامات پر گرج چمک کے طوفان بن سکتے ہیں۔
کراچی میں زیادھ سے زیادہ درجہ حرارت 34 سے 36 ڈگری سینٹی گریڈ رہنے کا امکان ہے جو کہ معمول کے مطابق یا معمول سے 1.5 ڈگری سینٹی گریڈ کم ہے۔ تاہم رواں ہفتے کے وسط سے اختتام تک زیادہ سے زیادہ درجہ حرارت میں اضافہ متوقع ہے، جب درجہ حرارت 36 سے 38 ڈگری سینٹی گریڈ (معمول سے 1 سے 2 ڈگری سینٹی گریڈ زیادہ) رہنے کا امکان ہے۔ دن کے وقت مغرب یا جنوب مغرب کی سمت سے 40 سے 55 کلومیٹر فی گھنٹہ کی ہوائیں متوقع ہیں۔

Comments are closed.