سحری میں ایک چیز کھالیں پیٹ ایسا فلیٹ ہوگا جیسے کبھی تھا ہی نہیں اس عید پر آپ گلے ملیں گے آپ کا پیٹ نظر نہیں آئے گا

آپ کو ایسی رمیڈ ی کے بارے میں بتائیں گے۔ جس کے استعمال سے آپ اپنے پیٹ کو چند ہی دنوں میں بالکل فلیٹ کرسکتے ہیں۔

جتنا بھی پرانا پیٹ بڑھاہوا ہے۔ اس عید پر اکثر بڑے پیٹ والوں کے ساتھ ہوتا ہے۔ کیونکہ ان کا پیٹ آپس میں ملتا ہے۔ تو اس عید پر ایسا نہیں ہوگا۔ لوگ آپ سے پوچھیں گے کہ ایسا کیا استعمال کیا ہے؟ تو آپ پورے فخر سے بتائیں گے کہ گھر میں رہتے ہوئے بغیر ایکسر سائز اور بغیر کوئی کام کے اپنے پیٹ کو کم کس طریقے سے کم کیا ہے۔ اس رمیڈ ی کو بنانے کے لیے گھر میں جو نارمل سے گلاس ہوتا ہےوہ ایک گلاس پانی لیناہے۔ پانی تھوڑا سا نیم گرم ہونا چاہیے۔اس کے بعد ہمیں چاہیے ہوگی براؤن شوگر یعنی کہ شکر ۔ گڑ والی جو شکر ہوتی ہے۔یہ آپ استعمال کرسکتےہیں۔ اگر آپ کے پاس نہیں ہے۔ ایک گلاس پانی میں دو چمچ انار کا جوس جو بازار سے ملتا ہے وہ شامل کرسکتے ہیں۔ یا پھر آپ اس پانی کی جگہ لسی کا استعمال بھی کرسکتے ہیں۔ اور دوچمچ شکر کے ڈال لیں۔ اور تیسرے نمبر پر ایک لیموں کا رس ڈا ل لینا ہے۔ ایک چمچ لیموں کا رس ڈالنا ہے۔ اس کے بیج نکال لیں۔ اب ان دونو ں چیزوں کو اچھے طریقے سے مکس کریں گے ۔

تاکہ ہمارا یہ ڈرنک بن کر تیا رہوجائے۔ اب اس ڈرنک کو اچھے طریقے سے چھننی کی مدد سے چھان لیں گے ۔ تاکہ اس کے نیچے کوئی بھی بیج وغیرہ ہوتو وہ ہمارے منہ میں نہ آئیں۔ اور آسانی سے پی سکیں۔ تو پیٹ کو کم کرنے کے لیے ڈرنک کے ساتھ جو ایک چیز کھانی ہے۔ اسپغول کا چھلکا۔ اسے اسپغول کی بھوسی بھی کہتے ہیں۔ یہ آپ کو پنسا ر کی دکان سے مل جائے گا۔ یہ آپ کے وزن کوکم کرنے کے ساتھ ساتھ آپ کے جسم میں اچھی اور مثبت تبدیلیاں لے کرآئیں گے۔ کہ آپ خود حیران رہ جائیں گے۔آپ ایک چمچ اسپغول کا دچھلکا اس ڈرنک میں شامل کرلیں۔ اورمکس کرکے فوری طور پر پی لیں۔ ورنہ یہ پھول جائےگا۔ اور اس کو پینا تھوڑا مشکل ہوجائےگا۔ اور دوسرے طریقے میں آپ ایک ٹی سپون چھلکا کا کھا کر اوپر سے ڈرنک کا گلاس پی لیں۔ یہ کا م آپ سحر ی میں کرناہے۔ سحر ی کھانے کے بعد آخر میں اس ڈرنک کو پی لیں۔ اور اگلی سحر ی میں چوبیس گھنٹے کے بعد پینا ہے۔ انشاءاللہ آپ بہت تیزی سے اپنے پیٹ کو گھٹا سکتے ہیں۔ اور فلیٹ کرسکتے ہیں۔ اس کا آپ کے مسلز پر کوئی اثر نہیں ہوئےگا۔ آپ کی جسامت کو برقرار رکھے گا۔ صرف آپ کے فیٹ کو کم کرے گا۔

Comments are closed.