ایک ایسی عورت جس نے منکر نکیر سے سوالات کر ڈالی

این این ایس نیوز!رابعہ بصری کے بارے میں‌کہا جاتا ہے کہ یہ خواتین میں‌اللہ کے بہت قریب تھی اور ان کی ساری زندگی اللہ کی اطاعت میں‌گزری . یہ ایک باندی تھی . یہ رات کو غسل کر کے نئے صاف کپڑے پہن کر اچھے سے خوشبو لگا کر اپنے مالک کے پاس جاتی او ر ان سے کہتی کہ میری ضروت ہے کیا وہ کہتے کہ نہیں‌ہے.، تو یہ ان سے کہتی کہ اچھا پھر مجھے اجازت دیں‌کہ عبادت کروں . تو وہ اجازت دیتے اور پھر یہ اللہ کی ولی خاتون ساری رات اللہ کی عبادت میں‌گزار دیتی

اس کی عبادت کو دیکھ کر اس کے مالک نے اسے آزاد کر دیا . ان کی وفات 40 سال کی عمر میں‌ہوئی لیکن کثرت عبادت کی وجہ سے کافی ضعیف ہو گئی تھی . جب مرنے لگی تو ان کے پاس ایک خادمہ تھی . اس سے کہنے لگی کہ دیکھو جب میں‌مر جاؤں تو مجھے اسی کرتے کا کفن دینا اور راتوں رات دفنا دینا . اگلے دن اسی خادمہ کو خواب میں‌آءی تو اس نے پوچھا کہ بتاؤ کیا معاملہ ہو اتو کہنے لگی . کہ منکر نکیر آئے اور پوچھنے لگا من ربک بتا تیرا رب کون ہے . میں‌نے کہا چالیس سال اللہ کی عبادت کی ایک لمحہ کے لئے نہیں‌بھولی اور تم کہتے ہو ہو کہ

من ربک . وہ منکر نکیر آپس میں‌کہنے لگے اس کا کیا حساب لینا . پھر انہوں نے سوال کیا کہ آپ کا لباس کس نے بدل دیا ہے . کہنے لگی کہ اللہ نے مجھے یہ لباس پہنایا ہے اور میرا تہجد والا کرتا رکھ لیا ہے کہ قیامت کے روز اسے بھی میرے اعمال میں‌تولا جائے گا

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *