سست افراد کماہیں گھر بیٹھ کے

این این ایس نیوز! جرمن یونیورسٹی نے ایسے لوگوں کو وظائف دینے کا فیصلہ کیا ہے جو کچھ نہیں کرنا چاہتے یعنی وہ سستی اور کاہلی میں اپنا ثانی نہیں رکھتے۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق جرمنی کی یونیورسٹی ان لوگوں کو بھی پیسہ دینے کو تیار ہے جو کم سے کم کام کرتے ہوں۔ ہیمبرگ میںیونیورسٹی آف فائن آرٹس ایک انوکھے پراجیکٹ میں حصہ لینے کیلئے ایسے لوگوں کی تلاش کر رہی ہےجو

سست ہوں اور جن میں اولوالعزمی کی کمی ہو۔درخواست فارم میں درخواست دہندگان سے دو سوال پوچھے گئے ہیں۔ پہلا یہ کہ آپ کیا نہیں کرنا چاہتے ہیں اور جو آپ کرنا نہیں چاہتے ہیں ، وہ نہ کرنا کیوں اہم ہے؟ اس کیلئے درخواست دہندگان 15 ستمبر تک درخواستیں دے سکتے ہیں۔ پراجیکٹ کو ڈیزائن کرنے والے پروفیسر فریڈرک کے مطابق معاشی سماجی تبدیلی لانے میں مدد کیلئے سستی، کاہلی کا باریکی سے مطالعہ کرنا اہم ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

//graizoah.com/afu.php?zoneid=3437593