واک کے حیرت انگیز فائدے

این این ایس نیوز!واک نا صرف وزن میں کمی لاتا ہے اور صحت اچھی بناتا ہے اس کے ساتھ مردانہ کمزوری کا بھی بہترین علاج ہے ۔صرف روزانہ دو میل تیز چہل قدمی اس مسئلہ کا حل ہے

ماہرین کا کہنا ہے کہ واک کرنا ایک اچھی بات ہے لیکن اس کو مزید مفید بنایا جا سکتا ہے بس اس کے لئے واک کی کیفیت کو بدل ڈالیں ۔ ماہرین کے مطابق اگر واک میں تیز قدمی سے کام لیا جائے اور اس کےساتھ اگر قدموں کے درمیان کا فاصلہ زیادہ ہو تو اس سے مردانہ کمزوری بھی ختم ہو جاتی ہےمثانے کے پٹھوں کی ورزش ،جسے کیگل ورزش کہا جاتا ہے ،بھی بہت مؤثر پائی گئی ہے۔ان پٹھوں کی ورزش مختلف طریقوں سے کی جاسکتی ہے۔ مثال کے طور پر آپ کمر کے بل سیدھے لیٹ جائے اور پھر اپنے پیر اور کندھے زمین پر رکھتے ہوئے باقی جسم کو اوپر اٹھائیں۔جسم کو کچھ وقت کے لیے فضا میں رکھیں اور پھر آہستہ آہستہ واپس زمین پر لے آئیں۔

اسی طرح مثانے کے پٹھوں کو براہِ راست سکیڑنا اور پھیلانا بھی انہیں مضبوط کرنے کا بہترین طریقہ ہے۔ اس ورزش کے لیے اپنے مثانے کے پٹھوں کو اندر کی جانب کھینچتے ہوئے سکیڑیں ،یوں جیسے آپ پیشاب روکنے کی کوشش کر رہے ہوں،اور کچھ دیر اسی حالت میں رکھنے کے بعد انہیں آہستہ آہستہ ڈھیلا چھوڑ دیں۔اس عمل کو جتنی بار ممکن ہو دھرائیں۔ فزیکل فٹنس کے ماہرین کا کہنا ہے کہ یہ ورزشیں باقاعدگی سے کریں تو مردانہ کمزوری کا خدشہ ہی نہیں رہتا اور اگر کسی کو کمزوری پہلے ہی لاحق ہو تو وہ کچھ ہی عرصے میں اس سے نجات پا سکتا ہے

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *